احتساب بیورو کی ایک اور بڑی کاروائی

احتساب بیورو کی ایک اور بڑی کاروائی, احتساب بیورو کی انوسٹیگیشن ٹیم نے کشمیر کونسل کے ساڑھے تین کروڑ روپے سے زاہد میگا سکینڈل کیس میں ملوث ملزم محمد باسط ولد فتحیاب خان قوم منگرال ساکن انوہی سروٹہ سرساوہ کو آج کوٹلی سے گرفتار کر کے میرپور سیف ہاؤس منتقل کر دیا گیا ہے ملزم جو صحت

 

 

 

 

 

عامہ کا ملازم ہے نے کشمیر کونسل کے اہلکاروں کی ملی بھگت اور فراڈ کے ذریعے اپنےآپ کو پراجیکٹ لیڈر ظاہر کرتے ہوئے کشمیر کونسل کی جعلی سکیموں کے خلاف اپنے ذاتی بینک اکاؤنٹ میں ساڑھے تین کروڑ روپے سے زائد رقم منتقل کروا کر اپنے زاتی تصرف میں لاہی دوران تفتیش ملزم سے اہم انکشافات کی توقع ہے جس سے کرپشن میں ملوث اصل کرداروں تک پہنچنے میں مدد ملے گی اور احتساب کا داہرہ مزید وسیع ہونے کے امکانات ہیں ذرائع کے مطابق ملزم ایک بڑی شخصیت کے فرنٹ مین کا رول ادا کرتا رہا ہے احتساب بیورو کی اس کارروائی کو بڑے پیمانے پر سراہا جا رہا ہے اور توقع کی جا رہی ہے کہ مستقبل قریب میں کرپشن میں ملوث بڑے کرداروں کے گرد اب گھیرا تنگ ہوتا جارہا ہے یاد رہے کہ قبل ازیں احتساب بیورو کی جانب سے محکمہ صحت عامہ، محکمہ مال انتظامیہ ، برقیات، پوسٹ آفس، اکاؤنٹنٹ جنرل آفس اور بینک کے متعدد آفیسر ان جو کروڑوں روپے کے غبن میں ملوث تھے زیر مواخذہ لایا گیا ہے

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.