بینک اکاؤنٹ کی کن اقسام سے آپ منافع کماسکتے ہیں؟

بینک میں اکاؤنٹ کھلوانا تو آسان سا ہے لیکن اکاؤنٹ کھلواتے ہوئے یہ فیصلہ کرنا مشکل ہوتا ہے کہ کون سا اکاؤنٹ آپ کیلئے مناسب ہے اور کن اکاؤنٹس سے کتنے وقت کے بعد منافع کما سکتے ہیں۔ بینک اکاؤنٹ کھلواتے ہوئے کچھ معلومات اور دستاویز کی ضرورت ہوتی ہے جس کو جاننے کیلئے آپ کو برانچ میں جانا پڑتا

 

 

 

 

 

ہے جو ایک طویل وقت لینے والا عمل ہے۔وہ افراد جو 18 سال سے کم عمر ہیں ابتدائی طور پر 100 روپے بینک میں جمع کروا کے اپنا اکاؤنٹ کھلوا سکتے ہیں، اکاؤنٹ کھلوانے کیلیے ان کے والدین یا کسی سرپرست کا اُن کے ساتھ ہونا ضروری ہے، جس کیلیے انہیں اپنا بے فارم، والدین کا شناختی کارڈ اور سیلری سلپ فراہم کرنی ہوتی ہے۔تنخواہ دار اور وہ کاروباری افراد جو اپنی کمائی میں سے کچھ رقم محفوظ کرنا چاہتے ہیں، اُن کیلیے کرنٹ اکاؤنٹ ایک اچھا آپشن ہے جس پر آپ کو کوئی منافع نہیں ملتا اور نہ بینک میں جمع کروائی ہوئی رقم پر رمضان میں زکوۃ کاٹی جاتی ہے۔اگر آپ کا مقصد رقم محفوظ کرنے کے ساتھ ساتھ منافع کمانا بھی ہے تو آپ کو سیونگ اکاؤنٹ کھلوانا چاہیے جس پر رکھوائی گئی رقم پر آپ کو ہر ماہ منافع ملتا ہے۔ اس اکاؤنٹ میں جمع کروائی ہوئی رقم پر ہر سال رمضان کی پہلی تاریخ کو زکوۃ کی کٹوتی ہوتی ہے۔ زکوۃ کی کٹوتی سے بچنے کیلیے آپ کو اکاؤنٹ کھلواتے ہوئے یا رمضان سے ایک ماہ پہلے زکوۃ ڈیکلیریشن فارم جس کو سی زیڈ 50 بھی کہتے ہیں، بینک کو فراہم کرنا ہوتا ہے۔دیہاڑی دار طبقہ جو

 

 

 

 

 

روزمرہ کی بنیاد پر کماتے ہیں اور طلبہ جو اپنی جیب خرچ میں سے کچھ رقم محفوظ کرکے اس پر منافع کمانا چاہتے ہیں، آسان اکاؤنٹ کھلواسکتے ہیں۔ جس کیلیے انہیں صرف شناختی کارڈ کی کاپی بینک کو فراہم کرنی ہوتی ہے۔کچھ افراد کا مقصد اپنی رقم زیادہ وقت کیلیے کہیں رکھوا کے اُس پر منافع کمانا ہوتا ہے جس کیلیے وہ ٹرم ڈپازٹ اکاؤنٹ کھلواسکتے ہیں۔ اس اکاؤنٹ میں آپ ایک خاص مدت کیلیے رقم بینک میں رکھواتے ہیں۔ منافع حاصل کرنے کیلیے آپ کے پاس 2آپشنز ہوتے ہیں۔ پہلا یہ کہ آپ ہر ماہ منافع حاصل کریں اور دوسرا آپ مدت مکمل ہونے کے بعد منافع حاصل کریں لیکن مدت مکمل ہونے پر ملنے والا منافع ہر ماہ ملنے والے منافع سے زیادہ ہوتا ہے۔ واضح رہے کہ اگر آپ مقررہ مدت سے پہلے بینک سے رقم نکالتے ہیں تو آپ کو بینک کو کچھ رقم جرمانے کے طور پر ادا کرنی ہوگی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *