مجھے مزا نہیں آیااس لیےمیری ایک اور شادی کروا دیں 151 بچوں اور 16 بیویوں کے شوہر نے انوکھی خواہش ظاہر کردی

میں کوئی نوکری نہیں کرتا کیونکہ میری سب سے بڑی ڈیوٹی اپنی16بیویوں کا خیال رکھنا سجاد قادر عام طور پر مہنگائی کے اس دور میں مردوں کی اکثریت ایک شادی اور چند بچوں سے پریشان نظر آتی ہے تاہم آج ہم جس شخص سے متعلق آپ کوبتانے جارہے ہیں ان کی 16 بیویاں اور 151 بچے ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق

 

 

 

 

 

66 سالہ مسہیک نیندورو زمبابوبے سے تعلق رکھنے والے ریٹائرڈ فوجی ہیں جن کا دعویٰ ہے کہ وہ 151 بچوں اور 16 بیویوں کے باوجود کوئی نوکری نہیں کرتے کیوں کہ ان کی کل وقتی ملازمت اپنی 16 بیویوں کا خیال کرنا ہے۔ مسہیک نیندورو کا کہنا ہے کہ وہ اتنی بیویاں رکھنے کے باوجود 17 ویں شادی کے لیے تیار ہیں۔غیر ملکی اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ انھوں نے یہ ازدواجی منصوبہ 1983میں شروع کیا تھا اور اس وقت تک رکنے کا ارادہ نہیں رکھتے جب تک انھیں موت نہیں آجاتی۔مسہیک کے مطابق انہیں اپنے متعدد ازواجی تجربات پر فخر ہے، اور اگر وہ کرسکے تو وہ 100 شادیاں کرتے تاکہ ان کے بچوں کی تعداد ایک ہزار تک ہو جاتیان کا کہنا ہے کہ وہ اپنی ہر بیوی کے ساتھ اس کی عمر کے مطابق برتاؤ کرتے ہیں چھوٹی عمر کی بیویوں سے ویسا برتاؤ نہیں کرتے جیسا بڑی عمر کی بیویوں کے ساتھ رکھتے ہیں۔مزید حیران کن بات جو مسہیک نے میڈیا کو بتائی وہ یہ کہ اتنا بڑا کنبہ ہونے کے باوجود مسہیک معاشی ذمہ داریوں کا بوجھ محسوس نہیں کرتے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ اس کے برعکس اپنے بڑے سے کنبے سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔انھوں نے کہا وہ اپنے بچوں سمیت سوتیلے بچوں سے بھی گفٹ اور پیسے وصول کرتے ہیں۔مسہیک نے مزید بتایا کہ ان کی ہر بیوی روزانہ ان کے لیے کھانا پکاتی ہے لیکن وہ صرف وہی کھانا کھاتے ہیں جو مزیدار ہو۔زمبابوے سے تعلق رکھنے والے اس شخص نے شادی پر اپنی تمام بیویوں سے وعدہ لے لیا تھا کہ وہ جب بھی ان کا کھانا واپس کریں گے تو وہ ناراض نہیں ہوں گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.