عورتوں کے بال کاٹنا کیوں منع ہے؟؟ کیا عورت شوہر کی اجازت سے بال کٹوا سکتی ہے؟؟

آج کا سوا ل یہ ہے کہ اسلام میں عورت کو بالوں کو قینچی لگانا حرام ہے؟ کیا یہ بات درست ہے ؟ عورتیں بالکل بال نہیں لگوا سکتی ہے۔ کسی کا کہنا ہے کہ ماتھے پر بال کاٹ کر رکھنا منع ہیں ۔ اس کا جواب بتاتے ہیں۔ عورتوں کے لیے بال زینت ہے۔ اور بغیر کسی مجبوری کے ان کو کاٹنا مکروہ ہے۔

آج کل لڑکیوں میں بال کٹوانا فیشن ہے۔ ایسی بے دین عورتوں کی مشابہت بھی ہے۔ دوسرا سوال یہ ہے کہ جس طرح عورتوں کو با ل کٹوانے کی اجازت نہیں ہےچاہے وہ کسی عورت سے ہی کٹوائیں اسی طرح نابالغ لڑکیوں کے لیے یہی حکم ہے؟ان کے بال اپنے آسانی کے لیے کٹوا رہی ہوں اور نہ کہ فیشن کےلیے۔ میر ی ایک بچی سات سال کی ہے اورایک بچی آٹھ سال کی ہے۔ مجھے بتائیں کہ شریعت اس بارےمیں کیا کہتی ہے۔ اگر میں گنا ہ کررہی ہوں تو گنا ہ سے بچ سکوں۔ اس سوال کا جواب کچھ یوں ہے۔ کہ بچیوں کے بال کٹوانے کی ضرورت ہے تو کٹوائے جائیں۔ بلاضرورت کٹوانا ٹھیک نہیں ہے۔ تیسرے سوال کی جانب چلتے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ ہماری ایک ٹیچر ہے ۔ جنہوں نے اسلامیات میں گریجوایشن کیا ہوا ہے۔ اور کئی دفعہ سعودی عرب بھی گئیں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ عورتوں کا بال کٹوانا جائز ہے۔ قرآن و حدیث کی روشنی میں اگر یہ بات

جائز ہے ۔ تو درست ثابت کرکے دکھائیں۔ ٹیچر کا کہنا ہے کہ میں نے بہت ساری اسلامی کتابیں ،حدیث اورتفسیر پڑھی ہیں۔ کہ صرف دو طریقے سے جائزنہیں ہے۔ ایک تو اسلا می پٹے اور دوسرے مردوں جیسے۔ اسلام میں مرد کے لیے دو طرح سے بال کٹوانا جائز ہیں ورنہ منع ہیں۔ اس سوال کا جواب یہ ہے کہ عورت کا بال رکھنا ان کے سرکی زینت ہے اور بالوں کو کٹوانا مردوں کے ساتھ مشابہت ہے جو کہ ممنوع ہے۔ اسی طرح ایک چوتھا سوال ہے کہ آج کل فیشن کے دور میں عورت میں فیشن سے بال کٹوانے فیشن کا رواج ہے۔ اور سنا ہے کہ عورت کا بال کٹوانا اور مردوں سے مشابہت رکھنا ہے۔ جو کہ سخت منع ہے جبکہ بعض عورتیں کہتی ہیں کہ مردوں سے اجازت لینے کے بعد بال کٹوا سکتی ہے کیا اسلام میں اس کی کوئی اجازت ہے؟ یا حد مقرر ہے۔ اس سوال کا جواب یوں ہے کہ عورت کا مردوں سے مشابہت کرنا حرام ہے۔ آپ نبی کریمﷺ نے ایسی عورتوں پر لعنت فرمائی ہے۔ جو چیز ناجائز ہو وہ شوہر کی اجازت سے بھی ناجائز ہے ۔ اللہ پاک سے دعا ہے کہ اللہ پاک ہمیں دین کی سمجھ عطافرمائے اور دین پر چلنے کی توفیق عطافرمائے۔ آمین۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *