”حکومت کی کورونا ویکسی نیشن کے جعلی اندراج پر شناختی کارڈ بلاک کرنے کی درخواست“

کراچی : سندھ حکومت نے کورونا ویکسی نیشن کا جعلی اندراج کرانے والے افراد کے شناختی کارڈ بلاک کروا نے کے لیے این سی او سی سے باضابطہ درخواست کردی گئی۔ذرائع کے مطابق محکمہ صحت سندھ نے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) سے کورونا ویکسی نیشن کے جعلی اندراج کرنے والے افراد کے

 

 

 

 

 

قومی شناختی کارڈ بلاک کرنے کی درخواست کردی۔ محکمہ صحت کے شعبہ پبلک ہیلتھ کے سینئر ٹیکنیکل آفیسر ڈاکٹر سہیل رضا شیخ نے این سی او سی کے نیشنل کوآرڈی نیٹر کو خط ارسال کیا ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ کراچی کے ضلع شرقی کے عزیز بھٹی پولیس اسٹیشن نے 10 اگست 2021ء کو ایک شخص کے خلاف ایف آئی آر درج کی جو کورونا ویکسی نیشن کی جعلی انٹری کرنے والوں کا سہولت کار تھا۔خط میں کیا گیا ہے کہ اس جرم کے تحت 36 افراد کی کورونا ویکسی نیشن کا جعلی اندراج کیا گیا اس لیے ان افراد کی جانچ کی جائے اور ان کے قومی شناختی کارڈ بلاک کردیے جائیں۔ یاد رہے کہ وفاقی تحقیقاتی ایجنسی ایف آئی اے نے کورونا ویکسین کے جعلی سرٹیفکیٹ بنانے والے 2 افراد کو گرفتار کیاہے۔ایف آئی اے کے مطابق گرفتار افراد کورونا ویکسین کے جعلی سرٹیفکیٹ فروخت کرتے تھے۔ جعلی ویکسین سرٹیفکیٹ بیرون ملک کے لیے مسافروں کو دیا جاتا تھا۔حکام کا کہنا ہے کہ گرفتار افراد جعلی ویکسین سرٹیفکیٹ بنا کر آن لائن پیسے وصول کرتے تھے۔ گرفتار افراد میں ٹریول ایجنٹ بھی شامل ہے۔جعلی ویکسین سرٹیفکیٹ کی شکایات این سی او سی سے موصول ہوئی تھی۔ خیال رہے کہ پاکستان سے بیرون ملک جانے کیلئے کورونا ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ لازمی قرار دیا گیا ہے۔کورونا ویکسی نیشن سینٹر سے ڈیٹا نادرا کو ارسال کیا جاتا ہے اور کورونا ویکسی نیشن کا سرٹیفکیٹ نادار سے حاصل کیا جاتا ہے۔ سرٹیفکیٹ کی فیس100 رکھی گئی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.