عمران خان کا ساتھ کیوں چھوڑا؟ عبدالعلیم خان خود میدان میں آگئے

سینئر صوبائی وزیر پنجاب اور پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی )کے مرکزی رہنما عبدالعلیم خان نےمیڈیا پر اپنے استعفے کی خبریں نشرہونےکے بعد خود میدان میں آتے ہوئے ساری حقیقت بیان کردی ہے۔تفصیلات کے مطابق مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے عبدالعلیم خان کا کہناتھا کہ وزیر اعظم عمران خان

 

 

 

 

 

سے میرا تعلق سیاسی نہیں بلکہ ذاتی اور برادرانہ ہے۔ مجھے فخر ہے کہ میں گزشتہ 10 برس میں تحریک انصاف کی’نئےپاکستان‘ کی جدوجہد میں عمران خان کے شانہ بشانہ کھڑا رہا،آج بھی عمران خان سے میرا تعلق سیاست سے ہٹ کرخالصتاً ذاتی اور برادرانہ ہے جو ہمیشہ رہے گا۔انہوں نے کہا کہ میں نےعمران خان صاحب سے2 ماہ قبل گزارش کی تھی کہ میں نجی مصروفیات اورفاؤنڈیشن کے فلاحی کاموں پرتوجہ دینا چاہتاہوں اور اس کے لئے مجھےوزارت کی ذمہ داریوں سےمستعفٰی ہونےکی اجازت دی جائےجس پرانہوں نےانتظارکرنےکاکہا اوراس کےبعد 2 سے 3بار ملاقاتوں پر بھی انتظار کرنےکی ہدایات ملیں ،میں اپنے قائد کی اجازت کا منتظر ہوں، جس دن اُن سے اجازت ملی اس دن استعفیٰ وزیر اعلیٰ پنجاب کو دے دوں گا۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ میں اپنے قائد اور اپنی پارٹی کے لئے پہلے بھی ہر مشکل وقت میں کھڑا رہا اور آئندہ بھی جب میری ضرورت پڑی میں اپنے قائد عمران خان کے ساتھ کھڑا نظر آؤں گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.