عوام کا جینا مشکل ۔۔اب پٹرول کبھی سستا نہیں ہوگا۔۔اگر سستا کرنے کا کہا گیا تو کیا ہو گا؟ تارہ ترین خبر نے تہلکہ مچا دیا

عوام کا جینا مشکل ہو گیا قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ امور کو بتایاگیا ہے کہ افغانستان میں انسانی غذائی بحران سے نمٹنے کے لئے 351 ملین ڈالر کی ضرورت ہے ،30 فیصد تک امداد کی گئی ابھی بھی افغانستان میں بحران جنم لے سکتا ہے ،پٹرول کی قیمت کو کم کرنے کا کہا وہاں پیٹرول کرائسز ہو سکتا ہے۔

 

 

 

 

 

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ امور کا چیئرمین احسان اللہ ٹوانہ کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں ایڈیشنل سیکرٹری آفغانستان ڈیسک دفتر خارجہ عامر آفتاب قریشی نے کمیٹی کو بریفنگ دی اور کہا کہ افغانستان میں اس وقت انسانی المیہ ہے اور خوراک کا بحران جنم لے سکتا ہے ،پیٹرول کی قیمت کو کم کرنے کا کہا وہاں پیٹرول کرائسز ہو سکتا ہے۔ انہوںنے کہاکہ طالبان نے نوے کی دہائی کی بانسبت سنجیدگی دکھائی ہے جس کو دیکھ کر لوگ اتنے خوفزدہ نہیں ،افغانستان میں مہنگائی بڑھ رہی ہے جو خرابی کی طرف لیجائے گا،1 لاکھ بیس ہزار لوگ بے گھر ہو چکے ،روس ،پاکستان اور چین نے سفارتخانے بند نہیں کئے ۔ انہوںنے کہاکہ چار اہم نکات جن میں مشترکہ گورنمنٹ اہم ہے اس سے دنیا طالبان حکومت کو تسلیم بھی کرے گی ،15 اگست کو افغان رہنما پاکستان آئے ۔ انہوںنے کہاکہ احمد شاہ مسعود کے بھائی اور حزب وحدت کے رہنماؤں سمیت کریم خلیلی پاکستان آئے،پاکستان کا ایک اہم موقف رہا کہ مل کر حکومت کو تشکیل دے،افغانستان کے حالات اور حکومت کو انسانی حقوق کے معاملات متاثر کر سکتے ہیں،کسی پراکسی کو افغانستان میں قدم جگانے کا موقع نہیں ملے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.