”افغان صدر اشرف غنی کا قریبی ساتھی نوٹوں سے بھرا بیگ لے کر ائیر پورٹ پہنچ گیا ، پھر اسکے ساتھ کیا ہوا ؟“

کابل (ویب ڈیسک) افغانستان میں تالبان کی پیش قدمی کے بعد صدر اشرف غنی کے قریبی ساتھی ایک ایک کرکے ملک سے فرار ہونے لگے ہیں تاہم اب حکومت نے حکومتی حکام کے فرار پر پابندی عائد کردی۔افغانستان سے تعلق رکھنے والے صحافی سمیع مہدی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ اشرف غنی کا سینئر

 

 

 

 

 

مشیر اور ان کا سب سے قریبی ساتھی کابل ایئر پورٹ سے دبئی فرار ہونا چاہتا تھا لیکن اسے ایئر پورٹ کے وی آئی پی لاؤنج میں روک دیا گیا۔ اس مشیر کے پاس مبینہ طور پر پیسوں سے بھرا ہوا بیگ بھی تھا۔سمیع مہدی کے مطابق اشرف غنی انتظامیہ نے ایئر پورٹ حکام کو ہدایت کی ہے کہ کسی بھی اہلکار کو ملک نہ چھوڑنے دیا جائے۔خیال رہے کہ اس سے قبل افغانستان کے وزیر خزانہ ملک سے فرار ہو چکے ہیں جب کہ پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی میں یدِ طولیٰ رکھنے والے نائب صدر امراللہ صالح کے بارے میں بھی اطلاعات ہیں کہ وہ تاجکستان چلے گئے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.