”مہنگائی کا نیا طوفان آنے کو تیار! پٹرول فی لیٹر 8 روپے مہنگا کر دیا گیا“

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا تسلسل برقرار ہے۔5 نومبر جمعہ سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا گیا ہے۔۔پٹرول کی نئی قیمت 8 روپے

 

 

 

 

اضافے سے 145 روپے ہوگئی ہے۔وزارت خزانہ کے نوٹیفیکیشن کے مطابق پٹرول کی قیمت میں 8 روپے 3پیسے اضافہ کیا گیا ہے۔ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 8 روپے 14 پیسے کا اضافہ کیا گیا ہے۔جس کے بعد اس کی نئی قیمت 142 روپے 62 پیسے ہوگئی ہے۔مٹی کے تیل کی قیمت 6 روپے 27 پیسے اضافے کے بعد 116 روپے 53 پیسے ہو گئی۔لائٹ ڈیزل آئل کی نئی قیمت 5 روپے 72 پیسے اضافے کے ساتھ 114 روپے 7 پیسے ہو گئی ہے۔وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ ریکوری میں کمی کے سبب پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ناگزیر تھا۔اگر اوگراکی سمری کے مطابق پیسے بڑھاتے تو قیمتوں میں مزید اضافہ ہوتا۔دوسری جانب کابینہ کی انرجی کمیٹی نے پیٹرولیم ڈویژن کو 30 روز میں مربوط پالیسی بنا کر پیش کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ جمعرات کو وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کی زیر صدارت کابینہ کی انرجی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پیٹرولیم ڈویژن کی پاکستان آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ پلان کی سمری پر غور کیا گیا ۔اعلامیہ کے مطابق منصوبے کا مقصد سی پیک کے تحت قائم انرجی ورکنگ گروپ کی اعانت ہے، اقدام سے ملک کے تیل اور گیس کے شعبے میں سرمایہ کاری کو حتمی شکل دی جاسکے گی۔ اعلامیہ کے مطابق کمیٹی کی پیٹرولیم ڈویژن کو 30 روز میں مربوط پالیسی بنا کر پیش کرنے کی ہدایت کی ۔اجلاس میں ٹرانسمیشن سسٹم کی رکاوٹوں کے خاتمے کے امور پر بھی بات چیت کی گئی ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *