الیکٹرونک ووٹنگ مشین کا معاملہ : حکمران جماعت ایک بار پھر الیکشن کمیشن پر چڑھ دوڑی ، حیران کن دلائل

اسلام آباد(ویب ڈیسک)الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے استعمال پر حکومت اور الیکشن کمیشن کے جھگڑے میں تیزی آگئی ۔ وفاقی وزراءفواد چوہدری اور شبلی فرازکا کہناہے کہ چیف الیکشن کمشنر اپوزیشن کی زبان بول رہے ہیں۔وہ خودکو تنازعات سے الگ کریں یا عہدے سے استعفیٰ دیکر سیاست کریں ‘ الیکٹرانک ووٹنگ مشین

 

 

 

 

 

دیکھے بغیر اعتراضات کیے گئے جو کہ بچگانہ ہیں ۔سینیٹرفیصل جاوید نے کہاہے کہ انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کا استعمال ناگزیر ہےجبکہ معاون خصوصی شہبازگل کا کہنا ہے کہ پاکستان کے ہر ادارے پر دھاوا بولنے والی ن لیگ کو الیکشن کمیشن کے دفاع کا دن رات درد ہوااٹھا ہے ۔پی ٹی آئی ہر ادارے کا احترام کرتی ہے لیکن دو قلب ایک جان کی اس کشمکش سے واضح ہے کہ یہ گٹھ جوڑ پاکستان میں انتخابی اصلاحات کو روک کر ہر صورت دھاندلی کا سلسلہ جاری رکھنا چاہتاہے۔ پی ٹی آئی یہ ہونے نہیں دے گی۔ تفصیلات کے مطابق بدھ کو وفاقی وزیر سائنس وٹیکنالوجی سینیٹر شبلی فراز کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا کہ الیکشن کمیشن اور الیکشن کمشنر دو مختلف چیزیں ہیں‘ الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے خلاف باقاعدہ مہم چلائی جارہی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *