حکومت کا ایک اور فیصلہ! تمام چینلز اور یوٹیوبرز کو جھٹکا دے دیا ، رقم نکلوانے کا نیا منصوبہ بنا لیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی وفاقی حکومت نے پاکستان ٹیلی ڈویژن (پی ٹی وی) پارلیمنٹ کی فیڈ استعمال کرنے والے چینلز سے پیسے لینے کا فیصلہ کر لیا۔ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات کا اجلاس ہوا، اجلاس سینیٹر فیصل جاوید کی قیادت میں ہوا، قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات میں

 

 

 

 

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے شرکت کی۔ اجلاس کے دوران بتایا گیا کہ وفاقی حکومت نے پی ٹی وی پارلیمنٹ کی فیڈ استعمال کرنے والے چینلز سے پیسے لینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ وزیر اطلاعات فواد چودھری کا کہنا ہے کہ جو نجی چینل پی ٹی وی پارلیمنٹ استعمال کر رہے ہیں وہ پیسے دیں گے۔ چینلز پی ٹی وی پارلیمنٹ کی براڈکاسٹ لیکر پیسے لے رہے ہیں لیکن ہمیں نہیں دے رہے۔ چیئر مین کمیٹی نے اسفتار کیا کہ نجی چینلز کو اجازت ہی نہیں تو وہ کیسے آکر کوریج کریں۔ اس پر جواب دیتے ہوئے وزیراطلاعات نے بتایا کہ نجی چینلز کو اجازت دینا میرا اختیار نہیں۔ فواد چودھری کا کہنا تھا کہ پی ٹی وی پارلیمنٹ کو کمرشل وینچر کی طرف چلانا چاہتے ہیں۔ سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ اگر ریاست کا چینل تقاریر بھی نہیں دکھا سکتا تو پھر کیا ہے؟ چیئر مین کمیٹی نے کہا کہ کل رات کو بھی چینلز پر فیک نیوز چلتی رہی۔ اس پر فواد چودھری نے کہا کہ ہمیں فیک نیوز کے حوالے سے کافی مسائل کا سامنا ہے۔ پوری دنیا اس حوالے سے رولز لارہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی بل کا ڈرافٹ تیار کرلیا گیا۔ ایک کمیٹی بنادی گئی جس میں ڈرافٹ شئیر کیا جائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *