اس آدمی نے 37 دنوں میں چار لڑکیوں سے شادی کرلی شادی کی وجہ ایسی کہ جان کر سب حیران

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) شادی کرنا تو ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے مگر ایک سے زیادہ شادیاں کرنا یہ بھی کئی لوگوں کی ایک بڑی خواہش ہوتی ہے ایسا ہی اب ایک واقعہ سامنے آیا ہے جب تائیوان سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے معاوضے کے ساتھ ملنے والی چھٹیوں کے لیے 37 دن میں چار شادیاں کر ڈالیں۔ قانون کے

 

 

 

 

 

مطابق کسی بھی شخص کو شادی کے وقت کام سے آٹھ چھٹیاں دی جاتی ہیں اور ادارہ اس شخص کو ان چھٹیوں کا معاوضہ بھی ادا کرتا ہے۔ تائیوان سے تعلق رکھنے والے شخص نے اپنی پہلی شادی پر ملنے والی چھٹیوں کے آخری روز اپنی بیوی کو طلاق دے دی اور اگلے ہی دن دوسری شادی کر کے قانون کے تحت ایک بار پھر چھٹیاں طلب کر لیں، موصوف نے چھٹیوں میں توسیع کے لیے ایک ہی عورت سے 37 دن کے اندر تین مرتبہ طلاق دی اور متعلقہ شخص معاوضے کے ساتھ 32 چھٹیاں حاصل کرنے میں کامیاب ہوگیا۔ دوسری جانب اکمل نامی ایک لڑکا جس نے دعوی کیا ہے کہ وہ انڈے دیتا ہے اور اب تک 20 انڈے دے چکا ہے انڈونیشیاء میں‌ ڈاکٹرز کو تب حیرانگی کا سامنا کرنا پڑا جب ایک اکمل نامی لڑکے نے دعوی کیا کہ وہ انڈے دیتا ہے اور گزشتہ دو سال سے انڈے دے رہا ہے جن کی تعداد 20 ہو چکی ہے جب ڈاکٹروں‌ نے اس کی تشخیص‌ کی تو ایکسرے میں‌ بھی ایک انڈا اس کے جسم میں‌ نظر آیا . اکمل کے والد نے بھی اس دعوی کی تصدیق کی ہے اور اس کا کہنا تھا کہ ہمیں‌ پہلے یقین نہیں تھا لیکن اس نے ہمارے سامنے انڈہ دے ڈالا ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ کسی انسان کے جسم کے اندر انڈے جیسی چیز کا وجود میں آنا ناممکن سی بات ہے۔ لیکن اکمل کا کہنا ہے کہ کبھی ایسا اتفاق بھی نہیں ہوا کہ اسنے کوئی انڈا ثابت نگل لیا ہو۔ اس سارے واقعہ کے بعد ڈاکٹرز نے لڑکے کی حالت کا مطالعہ کرنے کے لئے اسے شیخ یوسف ہسپتال میں زیر نگرانی رکھ لیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.