لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت

وزیراعظم کی بجلی بل ادائیگی والے علاقوں میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت اسلام آباد (  ستمبر2021ء) وزیراعظم عمران خان نے بجلی بل ادائیگی والے علاقوں میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت کردی ہے، وزیر اعظم نے توانائی ڈویژن کو ہدایت کی کہ وہ ایسے گرڈ اسٹیشنز جہاں بلوں کی وصولیوں کا تناسب کم ہے

 

 

 

 

 

وہاں جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لائیں تاکہ بل ادا کرنے والے صارفین کو بلاتعطل بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وفاقی وزراء، وزرائے اعلیٰ اور اعلٰی افسران شریک ہوئے۔اجلاس میں تونائی ڈویژن نے بجلی کی پیداوارمیں اضافے کی منصوبہ بندی سے متعلق بریفنگ دی۔ یہ منصوبہ بندی دس سال کے لیے کی جاتی ہے، ضروریات کے مطابق حکمت عملی میں ضروری تبدیلیاں کی جاتی ہیں، منصوبہ بندی کا مقصد صارفین کو سستی بجلی فراہم کرنا ہے۔مام صوبوں اور آزاد جموں وکشمیر حکومت سے بھی تفصیلی مشاورت کی گئی، وزیراعظم عمران خان نے بجلی بل ادائیگی والے علاقوں میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی ہدایت کردی ہے، وزیر اعظم نے توانائی ڈویژن کو ہدایت کی کہ وہ ایسے گرڈ اسٹیشنز جہاں بلوں کی وصولیوں کا تناسب کم ہے وہاں جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لائیں تاکہ بل ادا کرنے والے صارفین کو بلاتعطل بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے۔دوسری جانب مشترکہ مفادات کونسل نے مستقبل میں سستی بجلی بنانے کے پلان کی منظوری دے دی، وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے ٹویٹر یر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ مستقبل میں مسابقتی بنیادوں پر سستی بجلی پیدا کی جائے گی۔ طویل مدتی پلان کی منظوری کے بعد مہنگی بجلی کی پیداوار کا خاتمہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ کیپسٹی اور غیرشفاف انداز میں ٹھیکے دینے کے مسائل کا خاتمہ ہوگا۔اگر ماضی میں ایسے پلان بنائے جاتے تو گردشی قرضے اور دیگر مسائل سے بچا جاسکتا تھا۔ حماد اظہر نے کہا کہ مشترکہ مفادات کونسل نے بجلی کی پیداوار کے طویل مدتی پلان کی منظوری دے دی ہے۔ یہ پلان 2005 سے زیر التوا تھا اب اس پلان کے تحت مستقبل میں طلب ورسد کی پروجیکشن دیکھ کر بجلی پیدا کی جائے پلان کے حوالے سے صوبوں کے ساتھ طویل مشاورت کی گئی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.