تبدیلی آ گئی،سرکاری افسر ہسپتال کی خوبصورت نرس کو اٹھا کرلے گیا اور پھر۔۔ایسا کام کہ پوری قوم غصے میں آگئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ملک بھر کی طرح پنجاب میں بھی خواتین کے ساتھ بد سلو کی کے واقعات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے مینار پاکستان واقعہ ، اس کے بعد رکشہ میں بوسہ والا واقعہ اور چوہنگ میں ماں بیٹی کے ساتھ زیادتی کا واقعہ، یہ تمام واقعات عالمی سطح پرپاکستان کی بدنامی کا باعث بنے ہیں ۔جبکہ اسلام آباد

 

 

 

 

 

پولیس نے وزارت آئی ٹی کے ذیلی ادارے پاک ڈیٹا کام کے ڈپٹی مینجر کو نجی اسپتال کی نرس کو اٹھا لے جانے اس کی ویڈوز بنا کر پریشرائز اور اس کے کپڑے پھا ڑنے کے الزام میں گر فتار کر لیا اور ملزم کو عدالت میں پیش کر کے دو روزہ جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کر لیا ہے، جی ایٹ ون میں رہائش پذیر نرس مسما ۃ(خ) نے تھانہ کراچی کمپنی میں رپورٹ درج کرائی کہ ملزم ناصر امیر نے ایک سال قبل رابطہ کیا اور دوستی کی پیشکش کی ،بار بار انکار کے باوجود ملز م کے اصرار پر سائلہ نے بات کی جس کے بعد مختلف اوقات میں وہ اپنے ساتھ لے کر جاتا رہا اور سائلہ کی متعدد تصاویر و ویڈیو چھپ کر بناتا رہا جن کی بنا پر سائلہ کو عرصہ 5ماہ سے پریشرائز کر رہا تھا،ملزم نے تصاویر ویڈیو مختلف لیپ ٹاپ یو ایس بی اور موبائل میں محفوظ کر رکھی ہیں، پیر کو رات ساڑھے دس بجے میرے گھر آیا اور کال کرکے کہا کہ باہر آ جاؤ اگر نہ آئی تو میں تمھیں مزا چکھاؤں گا اور فوراَ ملزم نے گھر کے باہر شور شرابا شروع کردیا شور کی آواز سن کر گھر سے باہر آئی تو ملزم نے سائلہ کو اُٹھا کر گاڑی میں ڈالنے کی کوشش کی اور سائلہ کے کپڑے پھاڑ دیئے اسی اثنا میں 15 پر کال کرکے وقوعہ کی بابت اطلاع دی اور اپنے آپ کو ملزم سے چھڑوا کر بھاگی۔ پولیس موقع پر پہنچ گئی اور ملزم کو تھانہ شفٹ کیا ، نرس کی رپورٹ پر پولیس نےملزم کے خلا ف ایف آئی آر درج کر کے تفتیش کا آغاز کر دیا ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.