کشمیر میں شکست ہوئی،فرخ حبیب

ریاست دشمن بیانیے کے باعث(ن)لیگ کو کشمیر میں شکست ہوئی،فرخ حبیب اسلام آباد(روزنامہ اوصاف)وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ ریاست دشمن بیانیے کے باعث(ن)لیگ کو کشمیر میں شکست ہوئی ،اب ن لیگ دھرنے دے یا احتجاج کرے کشمیریوں نے اپنا فیصلہ سنا دیا ہے ۔ الیکشن کمیشن کے

 

 

 

 

 

باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے فرخ حبیب نے کہا کہ کشمیر ایک پرامن ، جدوجہد کرنے اور قربانیاں دینے والوں کا علاقہ ہے ،مریم صفدر نے نفرت کا بیانیہ چلانے کی کوشش کی اور کشمیر کے دلیر سفیر اور سچے وکیل کو حرف تنقید کا نشانہ بنایا ، ان کی پوری انتخابی مہم اٹھا کر دیکھ لیں ، انہوں نے کہیں بھی اپنے انکل مودی یا آر ایس ایس کے نظریے کی مذمت تک نہیں کی اورنریندر مودی بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموں و کشمیر میں جو مظالم ڈھا رہا ہے اس پر بھی خاموشی اختیارکئےرکھی ۔ انہوں نے کہا کہ آج بہکی بہکی باتیں کرنے والے راجہ فاروق حیدر بتائیں کہ کیا انھیں جو پانچ سال حکومت کا موقع ملا کیا وہ غلامی کی حکومت تھی ، کیا برہان وانی ،سید علی گیلانی ،میر واعظ عمر فاروق ، آسیہ اندرابی سمیت لاکھوں کشمیریوں کی جدوجہد غلام حکومت کے لئے ہے ، ن لیگ کی اسی سوچ کو کشمیریوں نے ووٹ کی طاقت سے مسترد کیا ۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن سے قبل گیلپ سروے کے مطابق 44فیصد ووٹ پی ٹی آئی ، 12فیصد ن لیگ اور 9فیصد پیپلز پارٹی کو ملنے کی پیشن گوئی کی گئی جو بالکل درست ثابت ہوئی ، پی ٹی آئی کے ساتھ ان دو جماعتوں کا کوئی مقابلہ نہیں تھا بلکہ اصل میں ن لیگ اور پیپلز پارٹی کا دوسری اور تیسری پوزیشن کے لئے آپس میں مقابلہ تھا ، آئندہ بھی انہی کا مقابلہ اپوزیشن لیڈر کی سیٹ کے لئے ہوتا رہے گا ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے جس شخص پر ملاقات کی پابندی لگائی نواز شریف لندن میں بیٹھ

 

 

 

 

 

کر اس سے ملاقاتیں کرتے ہیں اور مودی کے ایجنڈے کو آگے بڑھاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں نے جو مینڈیٹ دیا ہے اس کونبھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کی ہمیشہ سے یہ ہی سیاست رہی جہاں پر الیکشن جیت جائیں وہاں الیکشن شفاف ہیں اور جہاں پر الیکشن ہار جائیں وہاں پر دھاندلی ہوئی ہے ، ان کے رونے دھونے سے اب کچھ نہیں ہونے والا ۔ ان کے پاس نہ پہلے دھاندلی کے کوئی ثبوت تھے اور نہ اب ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ہم نے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر کی تھی کہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے فارن اکائونٹس تک فنانشنل ایکسپرٹ اور چارٹر اکائونٹس کو جانچ پڑتال کے لئے رسائی دی جائے ، پی ٹی آئی کے اکائونٹس تک ماضی میں چارٹرڈ اکائونٹس کو رسائی دی گئی تھی ہم بھی یہ سہولت مانگ رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سٹیٹ بینک نے جو ریکارڈ جمع کرایا ہے اس کے مطابق مسلم لیگ ن کے 12اور پیپلز پارٹی کے 7ایسے فارن اکائونٹس ہیں جو گواشوروں میں ظاہر نہیں کیے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاضی کے شعبے میں تین نئے ریاضی دان فاروق حیدر ، شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کی صورت میں سامنے آئے ہیں ،جو نئی ریاضی متعارف کرانے کی ناکام کوشش کر رہے تھے ، 2013کے الیکشن میں پی ٹی آئی کے ووٹ ذیادہ تھے اور سٹیں کم تھیں ، ن لیگ کو پی ٹی آئی اور اپنے مخالف پڑنے والےدیگر ووٹ جمع کرنے نہیں آتے۔ انہوں نے کہا کہ

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.